تدریس حفظ القرآن

تدریس حفظ القرآن

تدریس حفظ القرآن

پوری کائنات میں اللہ تعالٰی کے کلام کو وہی حیثیت حاصل ہے جو خود اللہ تعالٰی کو مخلوق پر حاصل ہے۔ اللہ تعالٰی کا آخری کلام اس دینا میں قرآن مجید کی شکل میں محفوظ ہے۔ آپﷺ نے بھی قرآن مجید کی تعلیم پر زور دیا ہے۔ فرمایا ’’ تم میں بہتر شخص وہ ہے جو خود قرآن سیکھے اور دوسروں کو سیکھائیں ‘‘

کسی بھی معاشرے کی ترقی کے لئے قرآن مجید کے ہدایات پر عمل کرنا بہت ضروری ہوتا ہے۔ خود قرآن مجید میں ارشادِ ربانی ہے۔ کہ ’’ میں نے ان میں رسول بھیجا جو ان کوپہلے قرآن کی آیات سیکھائیں پھرعلم سیکھائیں، پھر حکمت اور پھر تزکیہ نفس کروائیں ‘‘

تعلیم قرآن کی اس ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے اُمہ ویلفیئر ٹرسٹ نے ’’ تدریسِ حفظ القرآن ‘‘ کے نام سے یہ پروگرام شروع کیا۔

الحمدللہ اس پروگرام کے تحت کل 1،311 طلباء جس میں 1،111 طلباء پاکستان اور 200 طلباء افغانستان سے حفظِ قرآن کی سعادت حاصل کررہے ہیں۔ اور ان کے لئے 66 حفاظ اساتذہ کرام کی خدمات حاصل کی جا چکی ہے۔ جن میں پاکستان سے 56 اور افغانستان سے 10 حفاظ اساتذہ کرام شامل ہیں۔

اُمہ ویلفیئرٹرسٹ کی جانب سے اس پروگرام کے تحت ہرحافظ استاد صاحب کوماہانہ 1700 روپے وظیفہ دیا جارہا ہے۔ جبکہ حفظ کرنے والے ہر طالب علم کو ان کی حوصلہ افزائی کے لئے ماہانہ 10 پاوٗنڈ بھی دیے جا رہے ہیں۔